ملفوظات

تبلیغ کی محنت کا خلاصہ

حضرت مولانا محمد الیاس صاحب رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”ہماری تبلیغ کا حاصل یہ ہے کہ عام دین دار مسلمان اپنے اوپر والوں سے دین کو لیں اور اپنے نیچے والوں کو دیں۔ مگر نیچے والوں کو اپنا محس سمجھیں۔ کیونکہ جتنا ہم کلمہ کو پہنچائیں گے …

اور پڑھو »

دائمی نفع دینے والی سرمایہ کاری

شیخ الحدیث حضرت مولانا محمد زکریا رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”دنیا کا کوئی کام بھی ہو بغیر محنت، مشقّت کے نہیں ہو سکتا، تجارت ہو، زراعت ہو، سب میں پاپڑ بیلنے پڑتے ہیں۔ اسی طرح دین کا کام بھی بغیر مشقّت کے نہیں ہو سکتا، مگر دونوں …

اور پڑھو »

صحت کی دولت

حضرت مولانا اشرف علی تھانوی رحمہ الله نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”حق تعالیٰ کے احسانات لا تداد ولاتحصیٰ ہیں۔ مثلا صحت ایک ایسی چیز ہے کہ تمام سلطنت اس کے برابر نہیں۔ اگر کسی بادشاہ کو مرض لاحق ہو جائے اور تمام سلطنت دے دینے پر صحت حاصل ہو، …

اور پڑھو »

اخلاص کے ساتھ مجاہدہ کرنا

حضرت مولانا محمد الیاس صاحب رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”اگر کوئی شخص اپنے کو تبلیغ کا اہل نہیں سمجھتا تو اس کو بیٹھا رہنا ہرگز نہیں چاہیئے، بلکہ اس کو تو کام میں لگنے اور دوسروں کو اٹھانے کی اور زیادہ کوشش کرنا چاہیئے، بعض دفعہ ایسا …

اور پڑھو »

اخلاق اور نسبت

شیخ الحدیث حضرت مولانا محمد زکریا رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”دوسری بات یہ ہے کہ نسبت الگ ہے اور اخلاق الگ ہیں۔ نسبت خاص تعلق مع اللہ ہے جتنا بڑھاؤگے بڑھےگا گھٹاؤگے گھٹےگا اور ایک ہیں اخلاق، اخلاق کا تعلق حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت …

اور پڑھو »

نیک اعمال کرنے کے موقع سے فائدہ اٹھانا

حضرت مولانا محمد الیاس صاحب رحمہ اللہ نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”شیطان کا یہ بہت بڑا دھوکہ اور فریب ہے کہ وہ مستقبل میں بڑے کام کی امید بندھا کر اس چھوٹے خیر کے کام سے روک دیتا ہے جو فی الحال ممکن ہوتا ہے۔ وہ چاہتا ہے کہ …

اور پڑھو »

نصرت کا مدار

حضرت مولانا اشرف علی تھانوی رحمہ الله نے ایک مرتبہ ارشاد فرمایا: ”فتح ونصرت کا مدار قلت اور کثرت پر نہیں وہ چیز ہی اور ہے۔ مسلمانوں کو صرف اسی ایک چیز کا خیال رکھنا چاہیئے یعنی خدا تعالیٰ کی رضاء پھر کام میں لگ جانا چاہیئے۔ اگر کامیاب ہوں …

اور پڑھو »

اتباعِ صالحین

اپنے اکابر کے احوال کو بہت اہتمام سے کتابوں میں دیکھتے اور پڑھتے رہا کرو، حضور کا زمانہ گو بہت دور چلا گیا؛ لیکن یہ اپنے اکابر حضور کی زندگی کا نمونہ ہمارے سامنے موجود ہے...

اور پڑھو »