قبر پر مٹی ڈالنے کا طریقہ ‏

(۱) قبر پر مٹی ڈالنے وقت سر کی طرف سے ابتدا کرنا مستحب ہے۔ دونوں ہاتھوں سے مٹی ڈالنا ایک ہاتھ سے مٹی ڈالنے سے بہتر ہے۔ قبر کو مٹی سے بھرنے کے لیے بیلچہ کا استعمال بھی جائز ہے۔

عن أبي هريرة أن رسول الله صلى الله عليه وسلم صلى على جنازة، ثم أتى قبر الميت فحثى عليه من قبل رأسه ثلاثا

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ”ایک شخص کی نمازِ جنازہ پڑھائی پھر اس کی قبر پر آئے اور اس کے سر کی طرف سے تین مرتبہ اس کی قبر پر مٹی ڈالی۔“

(۲) قبر پر تین بار مٹی ڈالنا مستحب ہے۔

(۳) پہلی بار مٹی ڈالتے وقت پڑھے،

منها خلقناكم

اسی سے (مٹی سے) ہم نے تمہیں پیدا کیا

اور دوسری بار  پڑھے،

وفيها نعيدكم

اور اسی میں (مٹی میں) ہم تمہیں لوٹا ئیں گے

اور تیسری بار پڑھے،

ومنها نخرجكم تارة أخرى

اور اسی سے (مٹی سے) ہم تمہیں دوبارہ اٹھائیں گے۔

Source: http://ihyaauddeen.co.za/?p=3792


Check Also

باغِ محبّت(ساتویں قسط)‏

بسم الله الرحمن الرحيم اللہ تعالیٰ کی عظیم ترین نعمت حضرت ایوب علیہ السلام اللہ …