‏(۱۵)‏ جنازہ کے متعلق متفرق مسائل

میّت کی جنازہ نماز اور تدفین میں تاخیر

سوال:- اگر کسی غیر ملکی شخص کا انتقال ہو جاوے اور اس کے اہل خانہ (جو اس کے ملک میں مقیم ہیں) اس کی لاش کا مطالبہ کریں، تو کیا ہمارے لئے اس کی لاش کو ان کی طرف بھیجنا جائز ہے یا نہیں؟

دوسری بات یہ ہے کہ ایسی صورت میں ہمارے ملک کا قانون یہ ہے کہ اگر ہم کسی کی لاش کو دوسرے ملک بھیجنا چاہیں، تو بھیجنے سے پہلے ضروری ہے کہ میّت کی رگوں میں کیمیکل داخل کیا جائے؛ تاکہ لاش بگڑ جانے اور سڑ جانے سے محفوظ رہے، تو کیا شریعت کی رو سے اس ملکی قانون پر عمل کرنا جائز ہے یا نہیں؟

جواب:- شریعت کا حکم یہ ہے کہ جب کسی شخص کا انتقال ہو جائے، تو جتنی جلدی ہو سکے اس کی تجہیز وتکفین کی جائے اور اس میں تاخیر نہ کی جائے۔ میّت کی تجہیز وتکفین میں تاخیر کرنا خلاف سنّت ہے اور ناجائز ہے۔

فقہائے کرام نے لکھا ہے کہ افضل یہ ہے کہ میّت کو اسی جگہ دفن کیا جائے جہاں اس کا انتقال ہوا ہے۔ اگر لاش کو کسی جگہ پر منتقل کرنا ہو، تو دیکھا جائے کہ لاش منتقل کرنے میں لاش کے بگڑ جانے اور سڑ جانے کا اندیشہ ہے یا نہیں۔ اگر کسی دور جگہ کی طرف لاش کو منتقل کیا جائے اور اس میں لاش کے بگڑ جانے اور سڑ جانے کا اندیشہ ہے، تو اس جگہ کی طرف منتقل کرنا جائز نہیں ہو گا اور اگر وہ جگہ زیادہ دور نہ ہو اور لاش کے بگڑ جانے اور سڑ جانے کا اندیشہ نہ ہو، تو لاش کو منتقل کرنا جائز ہوگا۔

البتہ میّت کی رگوں میں کیمیکل داخل کرنے کے بارے میں، تو شریعت کے رو سے یہ عمل خلاف سنّت ہے اور جائز نہیں ہے۔ اس وجہ سے اس صورت میں میّت کو اسی جگہ (اسی ملک) میں دفن کیا جائے جہاں اس کا انتقال ہوا ہو۔

سوال:- اگر کسی غیر ملکی شخص کا انتقال ہو جائے اور اس کے اہل خانہ (جو اس کے وطن میں مقیم ہیں) مطالبہ کریں کہ اس کی لاش اس کے ملک بھیجی جائے، تو کیا ایسی صورت میں لاش کو بیرون ملک بھیجنے سے پہلے ضروری ہے کہ میّت کو غسل دیا جائے، کفن پہنایا جائے اور اس کی جنازہ نماز پڑھی جائے؟

دوسری بات یہ ہے کہ جب میّت کی لاش اس کے گھر والوں تک پہونچ جائے، تو کیا ان پر غسل اور جنازہ نماز کا اعادہ لازم ہے؟

جواب:- ہاں، میّت کو ضرور غسل دیا جائے اور اس کی جنازہ نماز پڑھی جائے۔ جب ایک بار غسل دے دیا جائے اور جنازہ نماز پڑھ لی جائے، تو اعادہ کی ضرورت نہیں ہے۔

Source:


 

[۱]

Check Also

باغِ محبّت (اٹھائیسویں قسط)‏

بسم الله الرحمن الرحيم اولاد کی اچھی  تربیت کے لئے نیک صحبت کی ضرورت اولاد …